Ashburn , US
20-04-2024 |12 Shawwāl 1445 AH
نماز کے اوقات
فجر
12:00
طلوع آفتاب
13:25
ظہرین
20:09
مغربین
03:10

امامیہ جنتری 2023

امامیہ جنتری 2023  کا رنگین پی ڈی ایف ورژن ہماری تصدیق شدہ موبائل ایپلی کیشن پر اپلوڈ کیا جاچکا ہے۔ امامیہ جنتری پی ڈی ایف آن لائن ہر فرقے سے متعلق ہر قسم کی مذہبی معلومات کا ایک مکمل سیٹ ہے۔ اگر آپ زائچہ ، ستاروں کی مطابقت ، روزانہ اعمال، دعائیں ، اسلامی تاریخ اور بہت سی مزہبی معلومات حاصل کرنا چاہتے ہیں تو امامیہ جنتری 2023 آپ کی خدمت  میں حاضر ہے۔ آپ اپنی روزمرہ زندگی میں پیش آنے والےمسائل کے حل کے لیےآسان اور پراثر وظائف اور دعائیں بھی تلاش کر سکتے ہیں۔ امامیہ جنتری 2023 حاصل کرنے کے لئے ابھی03214127000 پر کال کریں۔ اس کے علاوہ یہاں کلک کر کے آن لائن آرڈر کریں۔  


اسلامی کیلنڈر کی تاریخیں اور نماز کے اوقات

کیا آپ ایک غیر مسلم ملک میں رہتے ہئں اور اپنے علاقے کی صحیح اسلامی تاریخوں اور نماز کے اوقات کے بارے میں پریشان ہیں؟ مزید فکر نہ کریں کیونکہ امامیہ جنتری آفیشل نے آپ کی اس مشکل کا حل نکال لیا ہے۔ امامیہ جنتری میں آپ کے پاس وظائف ، دعائیں ، اقتباسات ، قرآن پاک ترجمہ اور تلاوت کے ساتھ ، ہجری کیلنڈر کی درست تاریخیں ، اور ایک ہی کلک کے ساتھ بہت کچھ ہے۔ اگر آپ اپنے علاقے میں آج ہجری کی تاریخ جاننا چاہتے  ہیں تو ، صرف اپنے موبائل پر ایپلی کیشنیا یا اپنے براؤزر پر ویب سائٹ کھولیں اور بغیر کسی مشکل کے درست معلومات تلاش کریں۔ اسکرین کے اوپری حصے پر ، آپ کو ایک سبز ٹیب ملے گا جو گریگورین تاریخ اور شمسی ہجری کی تاریخ ،  آپ کا مقام اور ہمارا ہیلپ لائن نمبر دکھا رہا ہے۔
امامیہ جنتری تمام اسلامی مکاتب کا گھر ہے۔ اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا ہے کہ آپ شیع یا سنی مکتبہ فکر سے تعلق رکھتے ہیں ، آپ کو ایک ہی کلک کے ذریعے اپنے فرقے کے بارے میں وسیع معلومات حٓصل کر سکتے ہیں۔

گریگورین اور اسلامی کیلنڈر میں فرق

اسلامی کیلنڈر میں 12 مہینے ہیں اور اسلامی سال کے کل دن گریگورین سال سے کم ہیں۔ ہجری سال میں 354 سے 355 دن ہوتے ہیں ، اور گریگوریئن دن 355 سے 366 ہوتے ہیں۔ اسلامی سال محرم سے شروع ہوتا ہے جبکہ دوسری طرف گریگوریئن سال جنوری سے شروع ہوتا ہے۔ اسلامی سال کے مہینوں میں  محرم ، صفر ، ربیع الاول ، ربیع الثانی ، جمعہ الاول ، جمعہ التانی ، رجب ، شعبان ، رمضان ، شوال ، ذوالقعدہ  اور ذوالحجہ شامل ہیں۔  

نماز کے درست اوقات کا پتہ لگانا

اگر آپ ایک مصروف شیڈول میں زندگی گزار رہے ہیں اور اکثر اوقات نمازیں قضا کردیتیں ہیں تو امامیہ جنتری آپ کی ضرورت ہے۔ یہ ویب پورٹل آپ کو روزانہ نماز کا صحیح وقت دیتا ہے۔ آپ کے فرقے کے لحاظ سے حنفی یا فقہ جعفریہ نماز کے اوقات کا انتخاب کیا جا سکتا ہے۔ لاہور ، اسلام آباد ، کراچی اور ہر دوسرے شہر سمیت پاکستان میں نماز کے اوقات کے بارے میں جانننے کے لیےیہ بہترین پورٹل ہے۔ وقت بچانے کا یہ ایک آسان حل ہے۔ جب آج کی اسلامی تاریخ کے بارے میں متحدہ عرب امارات ، پاکستان ، مشرق وسطیٰ ، یا دنیا میں کہیں بھی معلوم کرنا چاہتے ہیں تو آپ امامیہ جنتری پر اعتماد کر سکتے ہیں۔ دنیا بھر کے لوگ سالوں سے امامیہ جنتریکا شائع کردہ ہجری کیلنڈر استعمال کر رہے ہیں۔  امامیہ جنتری آپ کو اسلام سے مربوط رکھنے کے لیے بہترین پورٹل ہے۔
امامیہ جنترے کی یک سالہ ایڈیشن میں آپ کو ہر اسلامی مہینے کی تاریخ کے بارے میں مستند معلومات فراہم کی جاتی ہیں۔ اگر آپ شادی کرنے کا ، کاروبار شروع کرنے کا ، سفر کرنے کا یا کوئی بھی بڑا کام کرنے کا ارادہ کررہیں تو براہ کرم اپنی طے شدہ تاریخ پر اسلامی تاریخوں کے اثرات سے موازنہ کریں۔

روحانیت

روحانیت
سخت پریشانی کے وقت روحانی علاج

کرہ ارض گذشتہ ایک سال سے بد ترین بحران کا شکار ہے ۔ دور حاضر میں روحانی مشاورت اتنی ناگزیر ہے کہ ہر کوئی اس سے استفادہ حاصل کرنا چاہتا ہے، پھر وہ مدد چاہے کتابی صورت میں ہو یا پھر آن لائن مشاورت پر مشتمل ہو ۔۔انسانی زندگی پر ان روحانی اثرات پر مشاورت کرنے والوں کی مانگ میں اضافہ ہوا ہے

تیل ایک کرشمہ - صحت

Dec 07, 2021 / جان ہے تو جہان ہے ~ مریم علی

گو  ارگینک کی جانب سےتیار کردہ یہ تمام ہئر آئلز آپ کے بالوں کا قدرتی علاج کرتے ہیں۔ ان کے کوئی سائیڈ افیکٹس نہیں ہیں ۔

مزید پڑھیں

بارگاہ ِلم یزل،تاثیرِبے مثل - عملیات

Sep 30, 2021 / ہدیہ اعمال ~ تجمل شیرازی

السلام علیکم قارئین اکرام! امید کرتا ہوں آپ سب خیر و عافیت سے ہوں گے۔ آج کے نفسانفسی کے عالم میں دعا ہے کہ اللہ پاک آپ سب کی حفاظت فرمائے، آمین۔ میری کوشش ہوتی ہے کہ اوراد و وظائف کو ہر لحاظ سے آسان بنایا جائے تاکہ آپ ان کو باآسانی عمل میں لا کر اِستفادہ کر سکیں۔ مندرجہ زیل عملیات کرنے میں آسان ہیں اور انکی افادیت بھی بہت ہے۔

مزید پڑھیں

قرآن پاک سے مسائل کا حل - دعائے قرآنی

Oct 16, 2021 / راہِ خدا ~ حکیم محمد ثنا اللہ

یہ آرٹیکل سورۃ طہٰ کے نقش پر تشکیل دیا گیا ہے ، اس نقش میں جائز محبت کیلئے حل موجود ہے.

مزید پڑھیں

دعا

بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْـمٰنِ الرَّحِيْمِ اللّٰھُمَّ انِّيْ اَسْئَلُكَ الْاَمَانَ يَوْمَ لَا يَنْفَعُ مَالٌ وَّلَا بَنُوْنَ اِلَّا مَنْ اَ تَي اللّهُ بِقَلْبٍ سَلِيْمٍ اَللّٰھُمَّ اِنِّيْٓ اَسْئَلُكَ الْاَمَانَ يَوْمَ يَعَضُّ الظَّالِمُ عَلٰي يَدَيْهِ يَقُوْلُ يَا لَيْتَنِي اتَّخَذْتُ مَعَ الرَّسُوْلِ سَبِيْلًا وَاَسْئَلُكَ الْاَمَانَ يَوْمَ يُعْرَفُ الْمُجْرِمُوْنَ بِسِيْمَاھُمْ فَيُؤْخَذُ بِالنَّوَاصِيْ وَالْاَقْدَام وَاَسْئَلُكَ  الْاَمَانَ  يَوْمَ لَا يَجْزِيْ وَالِدٌ عَنْ وَلَدِهٖ وَّلَا مَوْلُودٌ ھُوَ جَازٍ عَنْ وَّالِدِهٖ شَيْئًا اِنَّ وَعْدَ اللّهِ حَقٌّوَاَسْئَلُكَ الْاَمَانَ يَوْمَ لَا يَنْفَعُ الظَّالِمِيْنَ مَعْذِرَتُھُمْ وَلَھُمُ اللَّعْنَةُ وَلَھُمْ سُوْئُ الدَّارِ وَاَسْئَلُكَ الْاَمَانَ يَوْمَ لَا تَمْلِكُ نَفْسٌ لِنَفْسٍ شَيْئًا وَالْاَمْرُ يَوْمَئِذٍ ﷲِ وَاسْئَلُكَ الْاَمَانَ يَوْمَ يَفِرُّ الْمَرْئُ مِنْ اَخِيْهِ وَاُمِّهِ وَاَبِيْهِ وَصَاحِبَتِهِ وَبَنِيْهِ لِكُلِّ امْرِءٍ مِنْھُمْ يَوْمَئِذٍ شَاْنٌ يُغْنِيْهِوَاَسْئَلُكَ الْاَمَانَ يَوْمَ يَوَدُّ الْمُجْرِمُ لَوْ يَفْتَدِيْ مِنْ عَذَابِ يَوْمَئِذٍ بِبَنِيْهِ وَصَاحِبَتِهٖ وَاَخِيْهِ وَفَصِيْلَتِهِ الَّتِيْ تُؤْوِيْهِ وَمَنْ فِي الْاَرْضِ جَمِيْعًا ثُمَّ يُنْجِيْهِ كَلَّا انَّھَا لَظٰي نَزَّاعَةً لِلشَّوٰي مَوْلَايَ يَامَوْلَايَ اَنْتَ الْمَوْلٰي وَاَنَا الْعَبْدُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْعَبْدَ اِلَّا الْمَوْلٰي مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْمَالِكُ وَاَنَا الْمَمْلُوْكُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمَمْلُوْكَ اِلَّا الْمَالِكُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْعَزِيْزُ وَاَنَا الذَّلِيْلُ وَھَلْ يَرْحَمُ الذَّلِيْلَ اِلَّا الْعَزِيزُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْخَالِقُ وَاَنَا الْمَخْلُوْقُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمَخْلُوْقَ ِالَّا الْخَالِقُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْعَظِيْمُ وَاَنَا الْحَقِيْرُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْحَقِيْرَ اِلَّا الْعَظِيْمُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْقَوِيُّ وَاَنَا الضَّعِيْفُ وَھَلْ يَرْحَمُ الضَّعِيْفَ اِلَّا الْقَوِيُّ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَ نْتَ الْغَنِيُّ وَاَ نَا الْفَقِيْرُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْفَقِيْرَ اِلَّا الْغَنِيُّ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْمُعْطِيْ وَاَنَا السَّآئِلُ وَھَلْ يَرْحَمُ السَّآئِلَ اِلَّا الْمُعْطِيْ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْحَيُّ وَاَنَا الْمَيِّتُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمَيِّتَ اِلَّا الْحَيُّ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَ نْتَ الْبَاقِيْ وَاَ نَا الْفَانِيْ وَھَلْ يَرْحَمُ الْفَانِيْ اِلَّا الْبَاقِيْ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الدَّآئِمُ وَاَنَا الزَّآئِلُ وَھَلْ يَرْحَمُ الزَّآئِلَ اِلَّا الدَّآئِمُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الرَّازِقُ وَاَنَا الْمَرْزُوْقُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمَرْزُوْقَ اِلَّا الرَّازِقُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَ نْتَ الْجَوَادُ وَاَنَا الْبَخِيْلُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْبَخِيْلَ اِلَّا الْجَوَادُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَ نْتَ الْمُعَافِي وَاَنَا الْمُبْتَلٰي وَھَلْ يَرْحَمُ الْمُبْتَلٰي اِلَّا الْمُعَافِي مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْكَبِيْرُ وَاَنَا الصَّغِيْرُ وَھَلْ يَرْحَمُ الصَّغِيْرَ اِلَّا الْكَبِيْرُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْھَادِيْ وَاَنَا الضَّآلَّ وَھَلْ يَرْحَمُ الضَّآلَّ اِلَّا الْھَادِيْ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الرَّحْمٰنُ وَاَنَا الْمَرْحُوْمُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمَرْحُوْمَ اِلَّا الرَّحْمٰنُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ السُّلْطَانُ وَاَنَا الْمُمْتَحَنُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمُمْتَحَنَ اِلَّا السُّلْطَانُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الدَّلِيْلُ وَاَنَا الْمُتَحَيِّرُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمُتَحَيِّرَ اِلَّا الدَّلِيْلُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْغَفُوْرُ وَاَنَا الْمُذْنِبُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمُذْنِبَ اِلَّا الْغَفُوْرُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْغَالِبُ وَاَنَا الْمَغْلُوْبُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمَغْلُوْبَ اِلَّا الْغَالِبُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الرَّبُّ وَاَنَا الْمَرْبُوْبُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْمَرْبُوْبَ اِلَّا الرَّبُّ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ اَنْتَ الْمُتَكَبِّرُ وَاَنَا الْخَاشِعُ وَھَلْ يَرْحَمُ الْخَاشِعَ اِلَّا الْمُتَكَبِّرُ مَوْلَايَ يَا مَوْلَايَ ارْحَمْنِيْ بِرَحْمَتِكَ وَارْضَ عَنِّيْ بِجُوْدِكَ وَكَرَمِكَ وَفَضْلِكَ يَا ذَا الْجُوْدِ وَالْاِحْسَانِ وَالطَّوْلِ وَالْاِمْتِنَانِ بِرَحْمَتِكَ يَا اَرْحَمَ الرَّاحِمِيْنَ۔ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَليٰ مُحَمَّدٍ وَّاٰلِ مُحَمَّدٍ
حوالہ:مفاتیح الجنان
مزید پڑھیں
سور ۃ رحمان کا معنی ہے "سب سے زیادہ فائدہ مند" قرآن پاک کے پارہ نمبر27میں واقع ہے اور اس میں 78 آیات ہیں۔ اسے "مدنی سورۃ" کے طور پر درجہ بندی کیا گیا ہے۔ یہ قرآن کی ایک سب سے طاقتور سورت ہے جو ہمیں تمام بیماریوں ، دائمی یا وبائی بیماریوں کے حل کی طرف لے جاتی ہے ، اور روز مرہ کی زندگی کی تمام پریشانیوں سے نکلنے کا راستہ بنا تی ہے۔ ہم اس سورت کی انفرادیت اور اہمیت کوایسے بیان کر سکتے ہیں کہ اسے " قرآن مجید کی خوبصورتی " کے نام سے جانا جاتا ہے اور اس کا نام "الرحمٰن" رکھا گیا ہے جو اللہ کے خوبصورت ناموں میں سے ایک ہے۔ سورۃ رحمان کی تلاوت تمام بیماریوں کا ایک حتمی علاج ہے۔ اگر کوئی شخص اس کی تلاوت کرنے سے قاصر ہے تو پھر وہ اسے بہتر طور پر سن لے یا مریض کے قریب جو شخص یا رشتےدارحاضر ہو مریض کے سر کی جانب ہو کر اس سورۃ کی تلاوت کرے ۔ یہ ہر بیماری کا علاج ہےسواے موت کے۔ مزید یہ کہ اگر آپ کا بچہ / بچہ ذہنی یا جسمانی طور پر کمزور ہے تو ، آپ ہر روز بلا ناغہ سورۃ رحمان کی تلاوت کو امنے کھر میں چلایں اور ہو سکے تو روز پڑہیں۔ اللہ پاک پورے گھر اور بچے پر خصوصی برکتیں نازل کرے گا۔ اگر آپ کسی بھی طرح کے گھریلو تنازعات ، اضطراب ، گھبراہٹ اور کسی بھی طرح کے ذہنی تناؤ سے گزر رہے ہیں تو ، ذہنی تندرستی اور امن کے حصول کے لئے روزانہ کی بنیاد پر سورۃ رحمان کی تلاوت کرنے کی مشق کریں۔ آپ پانی کا گلاس بھی لے سکتے ہیں اور پانی پر ضرب پڑھ کر پی سکتے ہیں ، یہ بھی بہت موثر ہوگا۔
اَعُوْذُ بِاللّٰهِ مِنَ الشَّيْطَانِ الرَّجِيْمِ بِسْمِ اللّهِ الرَحْمٰنِ الرَّحيْمِ اَلرَّحْمٰنُ ﴿۱﴾ عَلَّمَ الْقُرْاٰنَ ﴿۲﴾ خَلَقَ الْاِنْسَانَ ﴿۳﴾ عَلَّمَهُ الْبَيَانَ ﴿۴﴾ اَلشَّمْسُ وَالْقَمَرُ بِحُسْبَانٍ ﴿۵﴾ وَّالنَّجْمُ والشَّجَرُ يَسْجُدٰنِ ﴿۶﴾ وَالسَّمَآءَ رَفَعَھَا وَوَضَعَ الْمِيْزَانِ ﴿۷﴾ اَلَّا تَطْغَوْا فِی الْمِيْزَانِ ﴿۸﴾ وَاَقِيْمُوا الْوَزْنَ بِالْقِسْطِ وَلَا تُخْسِرُواالْمِيْزَانَ ﴿۹﴾ وَالْاَرْضَ وَضَعَھَا لِلْاَنَامِ ﴿۱۰﴾ فِيْھَا فَاكِھَةٌ وَالنَّخْلُ ذَاتُ الْاَكْمَامِ ﴿۱۱﴾ وَالْحَبُّ ذُو الْعَصْفِ وَالرَّيْحَانُ ﴿۱۲﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۱۳﴾ خَلَقَ الْاِنْسَانَ مِنْ صَلْصَالٍ كَالْفَخَّارِ ﴿۱۴﴾ وَخَلَقَ الْجَآنَّ مِنْ مَّارِجٍ مِنْ نَّارٍ ﴿۱۵﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِرَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۱۶﴾ رَبُّ الْمَشْرِقَيْنِ وَرَبُّ الْمَغْرِبَيْنِ ﴿۱۷﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۱۸﴾ مَرَجَ الْبَحْرَيْنِ يَلْتَقِيٰنِ ﴿۱۹﴾ بَيْنَھُمَا بَرْزَخٌ لَّا يَبْغِيٰنِ ﴿۲۰﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۲۱﴾ يَخْرُجُ مِنْھُمَا اللُّؤْلُؤُ وَالْمَرْجَانُ ﴿۲۲﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۲۳﴾ وَلَهُ الْجَوَارِ الْمُنْشٓئٰتُ فِي الْبَحْرِ كَالْاَعْلاَمِ ﴿۲۴﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِرَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۲۵﴾ كُلُّ مَنْ عَلَيْھَا فَانٍ ﴿۲۶﴾ وَّيَبْقٰي وَجْهُ رَبِّكَ ذُو الْجلٰلِِ وَالْاِكْرَامِ ﴿۲۷﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۲۸﴾ يَسْئَلُهٗ مَنْ فِي السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْط كُلَّ يَوْمٍ ھُوَ فِي شَاْنٍ ﴿۲۹﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِرَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۳۰﴾ سَنَفْرُغُ لَكُمْ اَيُّهَ الثَّقَلٰنِ ﴿۳۱﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۳۲﴾  یٰمَعْشَرَالْجِنِّ وَالْاِنْسِ اِنِ اسْتَطَعْتُمْ اَنْ تَنْفُذُوْا مِنْ اَقْطَارِ السَّمٰوٰتِ وَالْاَرْضِ فَانْفُذُوْا لَا تَنْفُذُوْنَ اِلَّا بِسُلْطٰنٍ ﴿۳۳﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِرَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۳۴﴾ يُرْسَلُ عَلَيْكُمَا شُوَاظٌ مِنْ نَارٍ وَنُحَاسٌ فَلَا تَنْتَصِرٰنِ ﴿۳۵﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ﴿۳۶﴾ فَاِذَا انْشَقَّتِ السَّمَآءُ فَكَانَتْ وَرْدَةً كَالدِّھَانِ ﴿۳۷﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۳۸﴾ فَيَوْمَئِذٍ لَّا يُسْئَلُ عَنْ ذَنْبِهٖٓ اِنْسٌ وَّلَا جَآنٌّ ﴿۳۹﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۴۰﴾ يُعْرَفُ الْمُجْرِمُوْنَ بِسِيْمٰھُمْ فَيُؤْخَذُ بِالنَّوَاصِيْ وَالْاَقْدَامِ ﴿۴۱﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۴۲﴾ ھٰذِهٖ جَھَنَّمُ الَّتِيْ يُكَذِّبُ بِھَا الْمُجْرِمُوْنَ ﴿۴۳﴾ يَطُوفُونَ بَيْنَھَا وَبَيْنَ حَمِيْمٍ اٰنٍ ﴿۴۴﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۴۵﴾ وَلِمَنْ خَافَ مَقَامَ رَبِّهٖ جَنَّتٰنِ ﴿۴۶﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۴۷﴾ ذَوَاتَآ اَفْنَانٍ ﴿۴۸﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِرَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۴۹﴾ فِيْھِمَا عَيْنٰنِ تَجْرِيٰنِ ﴿۵۰﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۵۱﴾ فِيْھِمَا مِنْ كُلِِّ فَاكِھَةٍ زَوْجٰنِ ﴿۵۲﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِرَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۵۳﴾ مُتَّكِئِيْنَ عَلٰي فُرُشٍ بَطَآئِنُھَا مِنْ اِسْتَبْرَقٍ طوَجَنَا الْجَنَّتَيْنِ دَانٍ ﴿۵۴﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۵۵﴾ فِيْھِنَّ قٰصِرٰتُ الطَّرْفِ لَمْ يَطْمِثْھُنَّ اِنْسٌ قَبْلَھُمْ وَلَا جَآنٌّ ﴿۵۶﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۵۷﴾ كَاَ نَّھُنَّ الْيَاقُوْتُ وَالْمَرْجَانُ ﴿۵۸﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِرَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۵۹﴾ ھَلْ جَزَآءُ الْاِحْسَانِ اِلَّا الْاِحْسَانُ ۶۰﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۶۱﴾ وَمِنْ دُوْنِھِمَا جَنَّتٰنِ ﴿۶۲﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآْءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۶۳﴾ مُدْھَآمَّتٰنِ ﴿۶۴﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۶۵﴾ فِيْھِمَا عَيْنٰنِ نَضَّاخَتٰنِ ﴿۶۶﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِرَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۶۷﴾ فِيْھِمَا فَاكِھَةٌ وَنَخْلٌ وَرُمَّانٌ ﴿۶۸﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۶۹﴾ فِيْھِنَّ خَيْرٰتٌ حِسَانٌ ﴿۷۰﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۷۱﴾ حُوْرٌ مَقْصُوْرٰتٌ فِي الْخِيَامِ ﴿۷۲﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِرَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۷۳﴾ لَمْ يَطْمِثْھُنَّ اِنْسٌ قَبْلَھُمْ وَلَا جَآنٌّ ﴿۷۴﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۷۵﴾ مُتَّكِئِيْنَ عَلٰی رَفْرَفٍ خُضْرٍ وَعَبْقَرِيٍّ حِسَانٍ ﴿۷۶﴾ فَبِاَيِّ اٰلَآءِ رَبِّكُمَا تُكَذِّبٰنِ ﴿۷۷﴾ تَبٰرَكَ اسْمُ رَبِّكَ ذِی الْجَلٰلِ وَالْاِكْرَامِ ﴿۷۸﴾ صَدَقَ اللّٰهُ الْعَلِيُّ الْعَظِيْمُ                            
مزید پڑھیں
اَعُوْذُ بِاللّٰهِ مِنَ الشَّيْطَانِ الرَّجِيْمِ بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْـمٰنِ الرَّحِيْمِ تَبٰرَكَ الَّذِيْ بِيَدهِ الْمُلْكُ وَھُوَ عَلٰي كُلِّ شَيْ ءٍ قَدِيْرُنِ ﴿۱﴾ الَّذِيْ خَلَقَ الْمَوْتَ وَالْحَيٰوةَ لِيَبْلُوَكُمْ اَيُّكُمْ اَحْسَنُ عَمَلًاؕ وَھُوَ الْعَزِيْزُ الْغَفُوْرُ ﴿۲﴾ الَّذِيْ خَلَقَ سَبْحَ سَـمٰوٰتٍ طِبَا قًا    ؕ مَاتَرٰي فِيْ خِلْقِ الرَّحْـمٰنِ مِنْ تَفٰوُتٍؕ فَارْجِعِ الْبَصَرَلا ھَلْ تَرٰي مِنْ فُطُوْرٍ﴿۳﴾ ثُمَّ ارْجِعِ الْبَصَرَ كَرَّتَيْنِ يَنْقَلِبْ اِلَيْكَ الْبَصَرُ خَاسِئًا وَّھُوَ حَسِيْرٌ﴿۴﴾ وَلَقَدْ زَيَّنَّا السَّمَآءَ الدُّنْيَا بِـمَصَابِيْحَ وَجَعَلْنٰـھَا رُجُوْمًا لِّلشَّيٰطِيْنِ وَاَعْتَدْنَا لَهُمْ عَذابَ السَّعِيْرِ﴿۵﴾ وَلِلَّذِيْنَ كَفَرُوْا بِرَبِّـھِمْ عَذَابُ جَھَنَّمَؕ وَبِئْسَ الْمَصِيْرُ ﴿۶﴾ اِذَآ اُلْقُوْا فِيْـھَا سَـمِعُوْالَھَا شَھِيْقًا وَّھِيَ تَفُوْرُ ﴿۷﴾ تَكَادُ تَـمَيَّزُ مِنَ الْغَيْظِؕ كُلَّمَآ اُلْقِيَ فِيْھَا فَوْجٌ سَاَلَھُمْ خَزَنَتُھَآ اَلَمْ يَاْتِكُمْ نَذِيْرٌ ﴿۸﴾ قَالُوْا بَلٰي قَدْجَآئَ نَا نَذِيْرٌ فَكَذَّبْنَا وَقُلْنَا مَا نَزَّلَ اللّٰهُ مِنْ شَيْ ءٍ اِنْ اَنْتُمْ اِلَّا فِيْ ضَلٰلٍ كَبِيْرٍ ﴿۹﴾ وَقَالُوْ الَوْ كُنَّا نَسْمَعُ اَوْنَعْقِلُ مَاكُنَّا فِيْٓ اَصْحٰبِ السَّعِيْرِ ﴿۱۰﴾ فَاعْتَرَ فُوْابِذَنْبِـهِمْ ج فَسُحْقًالِّاَصْـحٰبِ السَّعِيْرِ ﴿۱۱﴾ اِنَّ الَّذِيْنَ يَـخْشَوْنَ رَبَّهُمْ بِالْغَيْبِ لَھُمْ مَّغْفِرَةٌ وَّاَجْرٌ كِبَيْرٌ ﴿۱۲﴾ وَاَسِرُّوْا قَوْلَكُمْ اَوِاجْھَرُوْا بِهٖؕ اِنَّهٗ عَلِيْمٌ بِذَاتِ الصُّدُوْرِ ﴿۱۳﴾ اَلَا يَعْلَمُ مَنْ خَلَقَؕ وَھُوَ اللَّطِيْفُ الْـخَبِيْرُ ﴿۱۴﴾ ھُوَ الَّذِيْ جَعَلَ لَكُمُ الْاَرْضَ ذَلُوْلًا فَامْشُوْا فِيْ مَنَا كِبِـھَا وَكُلُوْامِنْ رِّزْقِهِؕ وَاِلَيْهِ النُّشُوْرُ ﴿۱۵﴾ ءَاَمِنْتُمْ مَّنْ فِي السَّمَآءِ اَنْ يَّخْسِفَ بِكُمُ الْاَرْضَ فَاِذَاھِيَ تَـمُوْرُ ﴿۱۶﴾ اَمْ اَمِنْتُمْ مَّنْ فِي السَّمَآءِ اَنْ يُّرْسِلَ عَلَيْكُمْ حَاصِبًاؕ فَسَتَعْلَمُوْنَ كَيْفَ نَذِيْرِ ﴿۱۷﴾ وَلَقَدْ كَذَّبَ الَّذِيْنَ مِنْ قَبْلِھِمْ فَكَيْفَ كَانَ نَكِيْرِ ﴿۱۸﴾ اَوَلَمْ يَرَوْاِلٰي الطَّيْرِ فَوْقَھُمْ صٰٓفّٰتٍ وَّيَقْبِضْنَ مَا يُـمْسِكُھُنَّ اِلَّا الرَّحْـمٰنُؕ اِنَّهٗ بِكُلِّ شَيْءٍ بَصِيْرٌ ﴿۱۹﴾ اَمَّنْ ھٰذَا الَّذِيْ ھُوَ جُنْدٌ لَّكُمْ يَنْصُرُكُمْ مِّنْ دُوْنِ الرَّحْـمٰنِؕ اِنِ الْكٰفِرُوْنَ اِلَّافِيْ غُرُوْرٍ ﴿۲۰﴾ اَمَّنْ ھٰذَا الَّذِيْ يَرْزُ قُكُمْ اِنْ اَمْسَكَ رِزْقَهٗج بَلْ لَّجُّوافِيْ عُتُوٍّ وَّنُفُوْرٍ ﴿۲۱﴾ اَفَـمَنْ يَّـمْشِيْ مُكِبًّا عَلٰي وَجْھِهٖٓ اَھْدٰٓي اَمَّنْ يَّـمْشِيْ سَوِيًّا عَلٰي صِرَاطٍ مُّسْتَقِيْمٍ ﴿۲۲﴾ قُلْ ھُوَ الَّذِيْٓ اَنْشَاَكُمْ وَجَعَلَ لَكُمُ السَّمْعَ وَالْاَ بْصَارَ وَالْاَفْدَءِةَؕ قَلِيْلًا مَّا تَشْكُرُوْنَ ﴿۲۳﴾ قُلْ ھُوَ الَّذِيْ ذَرَاَكُمْ فِيْ الْاَرْضِ وَاِلَيْهِ تُـحْشَرُوْن ﴿۲۴﴾ وَيَقُوْلُوْنَ مَتٰي ھٰذَا الْوَعْدُ اِنْ كُنْتُمْ صٰدِقِيْنَ ﴿۲۵﴾ قُلْ اِنَّمَا الْعِلْمُ عِنْدَ اللّٰهِ ص وَاِنَّـمَآ اَنَا نَذِيْرٌ مُّبِيْنٌ ﴿۲۶﴾ فَلَمَّا رَاَوْهُ زُلْفَةً سِيْٓئَتْ وُجُوْهُ الَّذِيْنَ كَفَرُوْا وَقِيْلَ ھٰذَاالَّذِيْ كُنْتُمْ بِهٖ تَدَّعُوْنَ ﴿۲۷﴾ قُلْ اَرَءَيْتُمْ اِنْ اَھْلَكَنِي اللّٰهُ وَمَنْ مَّعِيَ اَوْرَحِـمَنَا لا فَـمَنْ يُّـجِيْرُ الْكٰفِرِيْنَ مِنْ عَذَابٍ اَلِيْمٍ ﴿۲۸﴾ قُلْ ھُوَ الرَّحْـمٰنُ اٰمَنَّا بِهٖ وَعَلَيْهِ تَوَكَّلْنَاج فَسَتَعْلَمُوْنَ مَنْ ھُوَ فِيْ ضَلٰلٍ مُّبِيْنٍ ﴿۲۹﴾ قُلْ اَرَءَيْتُمْ اِنْ اَصْبَحَ مَآؤُكُمْ غَوْرًا فَـمَنْ يَّاْتِيْكُمْ بِـمَآءٍ مَّعِيْنٍ ﴿۳۰﴾ صَدَقَ اللّٰهُ الْعَلِيُّ الْعَظِيْمُ
مزید پڑھیں
بِسْمِ اللّٰهِ الرَّحْمٰنِ الرَّحِيْمِ عَنْ فَاطِمَةَ الزَّھْرَآءِ عَلَيْھَا السَّلَامُ بِنْتِ رَسُوْلِ اللّٰهِ صَلَّي اللّٰهُ عَلَيْهِ وَاٰلِهَ قَالَ سَمِعْتُ فَاطِمَةَ اَنَّھَا قَالَتْ دَخَلَ عَلَيَّ اَبٖيْ رَسُوْلُ اللّٰهِ فٖيْ بَعْضِ الْأَ يَّامِ فَقَالَ السَّلَامُ عَلَيْكِ يَافَاطِمَةُ فَقُلْتُ عَلَيْكَ السَّلَامُ قَالَ اِنِّٓيْ اَجِدُ فِيْ بَدَنِيْ ضُعْفًا فَقُلْتُ لَهُ اُعِيْذُكَ بِا للّٰهِ يَآ اَبَتَاهُ مِنَ الضُّعْفِ فَقَالَ يَا فَاطِمَةُ اِيْتِيْنِيْ بِالْكِسآءِ الْيَـمَانِيْ فَغَطِّيْنِيِ بِهٖ فَاَتَيْتُهُ بِالْكِسَآءِ الْيـَمَانيِّ فَغَطَّيْتُهُ بِهٖ وَصِرْتُ اَنْظُرُ اِلَيْهِ وَاِذَا وَجْھُهٗ يَتَلَأ لَؤُ كَاَنَّهُ الْبَدْرُ فِيْ لَيْلَةِ تَمَامِهٖ وَكَمَالِهٖ فَمَا كَانَتْ اِلَّا سَاعَةً وَّ اِذَا بِوَ لَدِيَ الْحَسَنِ قَدْ اَقْبَلَ وَقَالَ اَلسَّلَامُ عَلَيْكِ يَآ اُمَّاهُ فَقُلْتُ وَعَليْكَ السَّلَامُ يَا قُرَّةَ عَيْنِيْ وَثَمَرَةَ فُؤَادِيْ فَقَالَ يَا اُمَّاهُ اِنِّيْ اَشَمُّ عِنْدَكِ رَآئِحَةً طَيِّبَةً كَاَ نَّـھَا رَآئِحَةُ جَدِّيْ رَسُوْلِ اللّٰهِ ؐ فَقُلْتُ نَعَمْ اِنَّ جَدَّكَ تَحْتَ الْكِسَآءِ فَاَقْبَلَ الْحَسَنُؑ نَحْوَالْكِسَآءِ وَقَالَ اَلسَّلَامُ عَلَيْكَ يَا جَدَّاهُ يَا رَسُوْلَ اللّٰهِؐ اَتَاْذَنُ لِٓيْ اَنْ اَدْخُلَ مَعَكَ تَحْتَ الْكِسَآءِ قَالَ وَعَلَيْكَ السَّلَامُ يَا وَلَدِيْ وَيَا صَاحِبَ حَوْضِيْ قَدْاَذِنْتُ لَكَ فَدَخَلَ مَعَهٗ تَحْتَ الْكِسَآءِ فَمَا كَانْتْ اِلَّاسَاعَةً وَّاِذَابِوَلَدِيَ الْحُسَيْنِؑ قَدْ اَقْبَلَ وَقَالَ اَلسَّلَامُ عَلَيْكِ يَا اُمَّاهُ فَقُلْتُ وَعَلَيْكَ السَّلَامُ يَا وَلَدِيْ وَيَاقُرَّةَ عَيْنِيْ وَثَمَرةَ فُؤَادِيْ فَقَالَ لِيْ يَا اُمَّاهُ اِنِّيْ اَشَمُّ عِنْدَكِ رَآئِحَةً طَيِّبَةً كَانَّھَا رَآئِحَةُ جَدِّيْ رَسُوْلِ اللّٰهِ فَقُلْتُ نَعَمْ اِنَّ جَدَّكَ وَاَخَاكَ تَحْتَ الْكِسَآءِ فَدَنَي الْحُسَيْنُؐ نَحْوَالْكِسَآءِ وَقَالَ اَلسَّلَامُ عَلَيْكَ يَا جَدَّاهُ اَلسَّلاَمُ عَلَيْـكَ يَا مَنِ اخْـتَارَهُ اللّٰهُ اَتَاْذَنُ لِيْٓ اَنْ اَدْخُلَ مَعَكُمَا تَحْتَ الْكِسَآءِ فَقَالَ وَعَلَيْكَ السَّلَامُ يَا وَلَدِيْ وَ يَا شَافِعَ اُمَّتِيْ قَدْ اَذِنْتُ لَكَ فَدَخَلَ مَعَهُمَا تَحْتَ الْكِسَآءِ فَاَقْبَلَ عِنْدَ ذٰلِكَ اَبُوالْحَسَنِؑ عَلِيُّ بْنُ اَبِيْطَالِبٍؑ وَقَالَ الَسَّلَامُ عَلَيْكِ يَا بِنْتَ رَسُوْلِ اللّٰهِؑ فَقُلْتُ وَعَلَيْكَ السَّلَامُ يَا اَبَاالْحَسَنِؑ وَيَا اَمَيْرِالْمُؤْمِنِيْنَؑ فَقَالَ يَا فَاطِمَةُ اِنِّيْ اَشَمُّ عِنْدَكِ رَآئِحَةً طَيِّبَةً كَاَنَّھَا رَآئِحَةُ اَخِيْ وَابْنِ عَمِّيْ رَسُوْلِ اللّٰهِؐ فَقُلْتُ نَعَمْ ھَا ھُوَ مَعَ وَلَدَيْكَ تَحْتَ الْكِسَآءِ فَاَقْبَلَ عَلِيٌّ نَحْوَ الْكِسَآءِ وَقَالَ اَلسَّلَامُ عَلَيْكَ يَارَسُوْلَ اللّٰهِؐ اَتَاْذَنُ لِٓيْ اَنْ اَكُوْنَ مَعَكُمْ تَحْتَ الْكِسَآءِ قَالَ لَهٗ وَعَلَيْكَ السَّلَامُ يَا اَخِيْ وَيَا وَصِيِّيْ وَ خَلِيْفَتِيْ وَصَاحِبَ لِوَآئِيْ قَدْ اَذِنتُ لَكَ فَدَخَلَ عَلِيُّ تَحْتَ الْكِسَآءِ ثُمَّ اَتَيْتُ نَحْوَ الْكِسَآءِوَقُلْتُ اَلسَّلَامُ عَلَيْكَ يَا اَبَتَاهُ يَا رَسُوْلَ اللّٰهِؐ اَتَاْذَنُ لِيْٓ اَنْ اَكُوْنَ مَعَكُمْ تَحْتَ الْكِسَآءِ قَالَ وَعَلَيْكِ السَّلَامُ يَا بِنْتِيْ وَيَا بَضْعَتِيْ قَدْ اَذِنْتُ لَكِ فَدَخَلْتُ تحْتَ الْكِسَآءِ فَلَمَّا اكْتَمَلْنَآ جَمِيْعًا تَحْتَ الْكِسَآءِ اَخَذَ اَبِيْ رَسُوْلُ اللّٰهِؐ بِطَرَفِيْ الْكِسَآءِ وَاَوْمَيَ بِيَدِهِ الْيُمْنٰي اِلَي السَّمٰآءِ وَقَالَ اَللّٰھُمَّ اِنَّ ھٰؤُ لٰآءِ اَھْلُ بَيْتِيْ وَخَآصَّتِيْ وَحَآمَّتِيْ لَحْمُھُمْ لَحْمِيْ وَدَمُھُمْ دَمِيْ يُؤْلِمُنِيْ مَا يُؤْ لِمُھُمْ وَيَحْزُنُنِيْ مَايَحْزُ نُھُمْ اَنَاحَرْبٌ لِّمَنْ حَارَبَھُمْ وَسِلْمٌ لِّمَنْ سَالَمَهُمْ وَعَدُ وٌّ لِّمَنْ عَادَاھُمْ وَمُحِبٌ لِّمَنْ اَجَبَّھُمْ اِنَّھُمْ مِنِّيْ وَاَنَا مِنْھُمْ فَاجْعَلْ صَلَوَاتِكَ وَبَرَ كَاتِكَ وَرَحْمَتِكَ وَغُفَراَنَكَ وَرِضْوَانَكَ عَلَيَّ وَعَلَيْھِمْ وَاَذْھِبْ عَنْهُمُ الِرّجْسَ وَطَھِّرْ ھُمْ تَطْھِيْراً فَقَالَ اللّٰهُ عَزَّوَجَلَّ يَا مَلَآئِكَتِيْ وَيَاسُكَّاَنَ سَمَوَاتِي اِنِّيْ مَا خَلَقْتُ سَمَآءً مَّبْنِيَّةً وَّلَا اَرْضاً مَّدْحِيَّةً وَّلَا قَمَرًا مُّنِيْراً وَّلَا شَمْسًا مُّضِٓيْئَةً وَّلَا فَلَكاً يَّدُوْرُ وَلَابَحْرًا يَّجْرِيْ وَلَا فُلْكًا يَّسْرِيْ اِلَّا فِيْ مَحَبَّةِ ھٰؤُلَآءِ الْخَمْسَةِ الَّذِيْنَ ھُمْ تَحْتَ الْكِسَآءِ فَقَالَ الْاَمِيْنُ جِبْرَآئِيْلُؑ يَارَبِّ وَمَنْ تَحْتَ الْكِسَآءِ فَقَالَ اللّٰهُ عَزَّوَجَلَّ ھُمْ اَھْلُ بَيْتِ النُّبُوَّةِ وَمَعْدِنُ الرِّسَالَةِ ھُمْ فَاطِمَةُ ؑوَ اَبُوْھَاؑ وَبَعْلُھَاؑ وَبَنُوْھَاؑ فَقَالَ جِبْرَآئِيْلُؑ يَا رَبِّ اَتَاْذَنُ لِيْٓ اَنْ اَھْبِطَ اِلَي الْاَرْضِ لِاَ كُوْنَ مَعَھُمْ سَادِساً فَقَالَ اللّٰهُ نَعَمْ قَدْ اَذِنْتُ لَكَ فَھَبَطَ الْاَمِيْنُ جِبْرَآئِيْلُ وَقَالَ اَلسَّلَامُ عَلَيْكَ يَارَسُوْلَ اللّٰهِؐ اَلْعَلِيُّ الْاَعْليٰ يَقْرِئُكَ السَّلَامَ وَيَخُصُّكَ بِالتَّحِيَّةِ وَالْاِكْرَامِ وَيَقُوْلُ لَكَ وَعِزَّتِيْ وَجَلَالِيْ اِنِّيْ مَا خَلَقْتُ سَمَآءً مَّبْنِيَّةً وَّلَا اَرْضاً مَّدْحِيَّةً وَّلَا قَمَرَاً مُّنِيْرًا وَّلَا شَمْسًا مُّضِيْئَةً وَّلَا فَلَكًا يَّدُوْرُ وَلَا بَحْراً يَّجْريْ وَّلَا فُلْكًا يَّسْرِيْ اِلَّا لِاَ جْلِكُمْ وَ مَحَبَّتِكُمْ وَقَدْاَذِنَ لِيْٓ اَنْاَدْخُلَ مَعْكُمْ فَهَلْ تَاْذَنُ لِيْ يَارَسُوْلَ اللّٰهِ فَقَالَ رَسُوْلُ اللّٰهِؐ وَعَلَيْكَ السَّلَامُ يَا اَمِيْنَ وَحْيِ اللّٰهِ اِنَّهٗ نَعَمْ قَدْ اَذِنْتُ لَكَ فَدَخَلَ جِبْرَآئِيْلُؑ مَعَنَا تَحْتَ الْكِسَآءِفَقَالَ لِاَ بِيْ اِنَّ اللّٰهَ قَدْ اَوْحٰي اِلَيْكُمْ يَقُوْلُ اِنَّمَايُرِيْدُ اللّٰهُ لِيُذْھِبَ عَنْكُمُ الرِّجْسَ اَھْلَ الْبَيْتِ وَ يُطَهِّرَكُمْ تَطْهِيْراًo فَقَالَ عَلِيٌّ لِاَبِيْ يَا رَسُوْلَ اللّٰهِؐ اَخْبِرْنِيْ مَا لِجُلُوْسِنَاھٰذَا تَحْتَ الْكِسَآءِ مِنَ الْفَضْلِ عِنْدَ اللّٰهِ فَقَالَ النَّبِيُّ وَالَّذِيْ بَعَثَنِيْ بِالْحَقِّ نَبِيًّا وَّ اصْطَفَانِيْ بِالرِّسَالَةِ نَجِيًّا مَّا ذُكِرَ خَبَرُنَا ھٰذَا فِيْ مَحْفِلٍ مِّنْ مَّحَافِلِ اَھْلِ الْاَرْضِ وَفِيْهِ جَمْعٌ مِّنْ شِيْعَتِنَا وَمُحِبِّيْنَا اِلَّاوَنَزَلَتْ عَلَيْھِمُ الرَّحْمَةُ وَحَفَّتْ بِھِمُ الْمَلٰٓائِكَةُ وَاسْتَغْفَرَتْ لَھُمْ اِلٰٓي اَنْ يَّتَفَرَّ قُوْا فَقَالَ عَلِيٌّ اِذًا وَّاللّٰهِ فُزْنَا وَفَازَ شِيَعَتُنَا وَرَبِّ الْكَعْبَةِ فَقَالَ اَبِيْ رَسُوُلَ اللّٰهِ صَلَّي اللّٰهَ عَلَيْهِ وَاٰلِهٖ يَا عَلِيُّ وَالَّذِيْ بَعَثَنِيْ بِالْحَقِّ نَبِيًّا وَّاصْطَفَانِيْ بِالرِّسَالَةِ نَجِيًّا مَّا ذُكِرَ خَبَرُنَا ھٰذَا فِيْ مَحْفِلٍ مِّنْ مَّحَافِلِ اَھْلِ الْاَرْضِ وَفِيْهِ جَمْعٌ مِّنْ شِيْعَتِنَا وَمُحِبِّيْنَا وَ فِيْهِمْ مَھْمُوْمٌ اِلَّا وَفَرَّجَ اللّٰهُ ھَمَّهٗ وَلَا مَغْمُوْمٌ اِلّٰا وَكَشَفَ اللّٰهُ غَمَّهٗ وَلَا طَالِبُ حَاجَةٍ اِلّٰا وَقَضَي اللّٰهُ حَاجَتَهٗ فَقَالَ عَلِيٌّ اِذًا وَّ اللّٰهِ فُزْنَا وَ سُعِدْنَا وَكَذٰلِكَ شِيْعَتُنَا فَازُوْا وَسُعِدُوَ افِي الدُّنْيَا وَالْاٰ خِرَةِ وَرَبِّ الْكَعْبَةِ اَللّٰھُمَّ صَلِّ عَليٰ مُحَمَّدٍ وَّاٰلِ مُحَمَّدٍ 
حوالہ:مفاتیح الجنان ۔۔ العوالم العلوم
مزید پڑھیں

اقوالِ زریں

بازار میں ذکر الہٰی میں مصروف شخص مردوں میں زندہ کی مثل، مغروروں میں نمازی کی مثل اور خشک درختوں میں سرسبز کی مثل ہے۔
حوالہ:اقوال زریں کا انسائیکلوپیڈیا مرتب نجمہ منصور
مزید پڑھیں
جس میں علم کی محبت نہیں اس میں کوئی بھلائی نہیں .
حوالہ:اقوال زریں کا انسائیکلوپیڈیا مرتب نجمہ منصور
مزید پڑھیں
مہمان خدا کا بھیجا ہوا ہوتا ہے اگر رضائے الہی کے لیے اس کی خدمت کی جائے تو یہ تکلف نہیں۔
حوالہ:اقوال زریں کا انسائیکلوپیڈیا مرتب نجمہ منصور
مزید پڑھیں
خدا کی بے انتہا نعمتوں کا شکرانہ انسانی طاقت سے باہر ہے۔
حوالہ:اقوال زریں کا انسائیکلوپیڈیا مرتب نجمہ منصور
مزید پڑھیں

ویڈیوز

Jade Stone ki Iqsam, Fawaid, Asrat Aur Pehchan | Johri Bataye Ga EP13 | جوہری بتائے گا | Jade Stone

Jade Stone ki Iqsam, Fawaid, Asrat Aur Pehchan | Johri Bataye Ga EP13 | جوہری بتائے گا | Jade Stone

خدا کی قدرت | بادشاہ ہارر گیا ، غریب آدمی جیت گیا | جہانِ حیرت قسط 18 | راشد آفاض کے ساتھ

Aik Raat main Quran Hifz Kar Liya | Ghareeb Admi ki Dastan e Zahanat | Jahan e Hairat Ep 12

Aik Raat main Quran Hifz Kar Liya | Ghareeb Admi ki Dastan e Zahanat | Jahan e Hairat Ep 12

اعمال

Islam, Aqeeda, Amal - A complete Lifestyle
اگر آپ عمال کے بارے میں مفصل علم کی تلاش کر رہے ہیں تو آپ صحیح صفحے پر پہنچ گئے ہیں - بشمول محرم ، صفر ، یا کسی اور اسلامی مہینے کے لئے عمال ، یا عاشورہ کے لئے عمال جیسے شب و روز جیسے مقدس ایام یا راتیں۔ -قدار وغیرہ۔

اگر آپ شیعہ ہیں ، یا آپ کے دوست یا ساتھی ہیں جن کا تعلق شیعہ مسلک سے ہے ، تو آپ نے انھیں صفر کے لئے عمال ، رجب کے لئے عمال ، محرم کے لئے عمال وغیرہ کے بارے میں سنا ہو گا۔

محرم کی پہلی رات

واضح ہو کہ محرم کا مہینہ اہلبیت اور ان کے پیروکاروں کے لئے رنج و غم کا مہینہ ہے۔ امام علی رضاعلیہ السلام سے روایت ہے کہ جب ماہ محرم آتا تھا تو کوئی شخص والد بزرگوار امام موسٰی کاظم علیہ السلام کو ہنستے ہوئے نہ پاتا تھا ،آپ پر حزن و ملال طاری رہا کرتا اور جب دسویں محرم کا دن آتا تو آہ وزاری کرتے اور فرماتے کہ آج وہ دن ہے جس میں امام حسین علیہ السلام کو شہید کیا گیا تھا۔ سید نے کتاب اقبال میں محرم کی پہلی رات کی چند نمازیں ذکر فرمائی ہیں :
(۱)   سورکعت نماز جس کی ہر رکعت میں سورۂ الحمد اور سورۂ توحید پڑھے : (۲)   دورکعت نماز جس کی پہلی رکعت میں سورۂ الحمد کے بعد سورۂ انعام اور دوسری رکعت میں سورۂ الحمد کے بعد سورۂ یاسین پڑھے : (۳)   دو رکعت نماز جس کی ہر رکعت میں سورۂ الحمد کے بعد گیارہ مرتبہ سورۂ توحید پڑھے :  
مزید پڑھیں

دسویں محرم کا دن (روزِ عاشوراء)

منقول ہے کہ جو شخص یوم عاشور اپنا دنیاوی کاروبار چھوڑے رہے تو حق تعالیٰ اس کے دنیا و آخرت سب کاموں کو انجام تک پہنچا دے گا ،جو شخص یوم عاشور کو گریہ و زاری اور رنج و غم میں گزارے تو خدائے تعالیٰ قیامت کے دن کو اس کیلئے خوشی و مسرت کا دن قرار دے گا اور اس شخص کی آنکھیں جنت میں اہلبیت کے دیدار سے روشن ہوں گی ،مگر جو لوگ یوم عاشورا کو برکت والا دن تصور کریں اور اس دن اپنے گھر میں سال بھر کا خرچ لا کر رکھیں تو حق تعالیٰ ان کی فراہم کی ہوئی جنس و مال کو ان کے لئے بابرکت نہ کرے گا اور ایسے لوگ قیامت کے دن یزید بن معاویہ ،عبیداللہ بن زیاد اور عمرابن سعد جیسے ملعون جہنمیوں کے ساتھ محشور ہوں گے اس لئے یوم عاشور میں کسی انسان کو دنیا کے کاروبار میں نہیں پڑنا چاہیے اور اس کی بجائے گریہ و زاری ،نوحہ و ماتم اور رنج و غم میں مشغول رہنا چاہیے نیز اپنے اہل و عیال کو بھی آمادہ کرے کہ وہ سینہ زنی و ماتم میں اس طرح مشغول ہوں جیسے اپنے کسی رشتہ دار کی موت پر ہوا کرتے ہیں ۔آج کے دن روزے کی نیت کے بغیر کھانا پینا ترک کیئے رہیں اور عصر کے بعد تھوڑے سے پانی و غیرہ سے فاقہ شکنی کریں اور دن بھر فاقے سے نہ رہیں مگر یہ کہ اس پر کوئی روزہ واجب ہو جیسے نذر وغیرہ آج کے دن گھر میں سال بھر کیلئے غلہ و جنس جمع نہ کرے ،آج کے دن ہنسنے سے پرہیز کریں، اور کھیل کود میں ہرگز مشغول نہ ہوں اور امام حسین کے قاتلوں پر ان الفاظ میں ہزار مرتبہ لعنت کریں:
اَللّـٰهُمَّ الْعَنْ قَتَلَةَ الْحُسَيْنِ عَلَيْهِ السَّلَامُ
مزید پڑھیں

مواد دستیاب نہیں ہے

مواد دستیاب نہیں ہے

مواد دستیاب نہیں ہے

مواد دستیاب نہیں ہے

مواد دستیاب نہیں ہے

مواد دستیاب نہیں ہے

مواد دستیاب نہیں ہے

دُعا و اعمالِ استقبالِ ماہِ رمضان

رمضان کی پہلی رات میں دعائے جوشن کبیر کا پڑھنا مستحب ہے:
حوالہ:مفاتیح الجنان
مزید پڑھیں

دُعا و اعمالِ استقبالِ ماہِ رمضان

جب ماہ رمضان آئے تو اس مہینے میں بہت زیادہ قرآن کی تلاوت کرے اور روایت ہے کہ امام جعفر صادق ؑ  تلاوت شروع کرنے سے پہلے یہ دعا پڑھتے تھے:
اللّٰهُمَّ اِنِّي اَشْهَدُ اَنَّ هٰذَا كِتَابُكَ الْمُنْزَلُ مِنْ عِنْدِكَ عَلَى رَسُولِكَ مُحَمَّدِ بْنِ عَبْدِ اللّٰهِ صَلَّى اللّٰهُ عَلَيْهِ وَ آلِهِ وَ كَلامُكَ النَّاطِقُ عَلَى لِسَانِ نَبِيِّكَ جَعَلْتَهُ هَادِيا مِنْكَ اِلَى خَلْقِكَ وَ حَبْلا مُتَّصِلا فِيمَا بَيْنَكَ وَ بَيْنَ عِبَادِكَ اللّٰهُمَّ اِنِّي نَشَرْتُ عَهْدَكَ وَ كِتَابَكَ اللّٰهُمَّ فَاجْعَلْ نَظَرِي فِيهِ عِبَادَةً وَ قِرَاءَتِي فِيهِ فِكْرا وَ فِكْرِي فِيهِ اعْتِبَارا وَ اجْعَلْنِي مِمَّنِ اتَّعَظَ بِبَيَانِ مَوَاعِظِكَ فِيهِ وَ اجْتَنَبَ مَعَاصِيَكَ وَ لا تَطْبَعْ عِنْدَ قِرَاءَتِي عَلَى سَمْعِي وَ لا تَجْعَلْ عَلَى بَصَرِي غِشَاوَةً وَ لا تَجْعَلْ قِرَاءَتِي قِرَاءَةً لا تَدَبُّرَ فِيهَا بَلِ اجْعَلْنِي اَتَدَبَّرُ آيَاتِهِ وَ اَحْكَامَهُ، آخِذا بِشَرَائِعِ دِينِكَ وَ لا تَجْعَلْ نَظَرِي فِيهِ غَفْلَةً وَ لا قِرَاءَتِي هَذَرا اِنَّكَ اَنْتَ الرَّءُوفُ الرَّحِيمُ
حوالہ:مفاتیح الجنان
مزید پڑھیں

دُعا و اعمالِ استقبالِ ماہِ رمضان

امام جعفر صادق ؑ  تلاوت کے بعد یہ دعا پڑھتے تھے:
اللّٰهُمَّ اِنِّي قَدْ قَرَأْتُ مَا قَضَيْتَ مِنْ كِتَابِكَ الَّذِي اَنْزَلْتَهُ عَلَى نَبِيِّكَ الصَّادِقِ صَلَّى اللّٰهُ عَلَيْهِ وَ آلِهِ فَلَكَ الْحَمْدُ رَبَّنَا اللّٰهُمَّ اجْعَلْنِي مِمَّنْ يُحِلُّ حَلالَهُ وَ يُحَرِّمُ حَرَامَهُ وَ يُؤْمِنُ بِمُحْكَمِهِ وَ مُتَشَابِهِهِ وَ اجْعَلْهُ لِي اُنْسا فِي قَبْرِي وَ اُنْسا فِي حَشْرِي وَ اجْعَلْنِي مِمَّنْ تُرْقِيهِ بِكُلِّ آيَةٍ قَرَاَهَا دَرَجَةً فِي اَعْلَى عِلِّيِّينَ آمِينَ رَبَّ الْعَالَمِينَ.
حوالہ:مفاتیح الجنان
مزید پڑھیں

اعمال شبِ اوّل ( شبِ عید الفطر)

یکم شوال کی رات بابرکت راتوں میں سے ہے، اس کی فضیلت ، بیداری،عبادت اور ثواب سے متعلق بہت سی احادیث وارد ہوئیں ھیں حضرتِ رسولؐ سے مروی ہے کہ یہ رات مرتبے میں شبِ قدر سے کچھ کم نہیں اور اس میں چند ایک اعمال ہے ﴿۱﴾ غروب آفتاب کے وقت غسل کرے ﴿۲﴾    شب بیداری یعنی نماز، دعا، استغفار اور خدا سے طلب حاجات کرتے ہوئے مسجد میں جاگ کر رات گزارے ﴿۳﴾   نماز مغرب ، عشا، فجر اور نماز عید کے بعد یہ تکبیریں پڑھے:
اَللّٰہُ اَکْبَرُ اَللّٰہُ اَکْبَرُ لَآ اِلٰہَ اِلَّا اللهُ وَاللهُ اَکْبَرُ اللهُ اَکْبَرُ وَ لِلّٰہِ الْحَمْدُ الْحَمْدُ لِلّٰہِ عَلٰی مَا ھَدَان وَلَہُ الشُّکْرُ عَلٰی مَآ اَوْلٰنَا
حوالہ:مفاتیح الجنان
مزید پڑھیں

ذوالقعدہ میں اتوار کے روز کی خصوصی نماز

اس ماہ میں اتوار کے دن کی ایک نماز ہے کہ جو بڑی فضیلت رکھتی ہے، حضرت رسول اﷲ کا فرمان ہے کہ جو شخص اس نماز کو بجا لائے اس کی توبہ قبول ہوتی ہے، گناہ بخشے جاتے ہیں، قیامت میں دشمن اس سے راضی ہو جائیں گے، اس کی موت ایمان پر ہوگی اور اس کا دین سلامت رہے گا۔ اس کی قبر وسیع و روشن ہوگی اس کے والدین اس سے راضی ہوں گے، اس کے والدین اور اولاد کو مغفرت حاصل ہوگی، اس کے رزق میں وسعت ہوگی، ملک الموت اس کی روح نرمی سے قبض کرے گا اور اس کی موت آسان ہوگی۔ اس نماز کا طریقہ یہ ہے:
اتوار کے دن غسل اور وضو کرکے چار رکعت نماز پڑھے جس کی ہر رکعت میں سورہ الحمد کے بعد تین مرتبہ سورہ توحید اور ایک ایک مرتبہ سورہ فلق و سورہ ناس کی قرائت کرے، ستر مرتبہ استغفار کرے اَسْتَغْفِرُ اللّٰهَ وَاَتُوْبُ اِلَيْهِ. اس کے بعد یہ دعا پڑھے: لَاْ حَوْلَ وَلَاْ قُوَّۃَ اِلَّا بِاللّٰهِ اْلعَلِیِ الْعَظِیْمِ پھر یہ دعا پڑھے: یَاعَزِیْزُ یَا غَفَّارُ اِغْفِرْلِیْ ذُنُوْبِیْ وَذُنُوِبِ جَمِیعِ اِلمُؤْمِنِیْنَ وَالْمُؤمِنَاتِ فَاِنَّہ لَا یَغْفِرُ الذُنُوْبَ اِلَّا اَنْتَ
حوالہ:مفاتیح الجنان
مزید پڑھیں

ذوالقعدہ کی پندرھویں شب

یہ بر کت والی رات ہے خدا اپنے مومن بندوں پر رحمت کی نگاہ ڈالتا ہے اور جو شخص اس رات میں خدا وند عالم کی عبادت میں مشغول رہتا ہے اس کے لئے سو ایسے روزے دار کا اجر ہو تا ہے جو مسجد میں رہا ہو اور خدا کی معصیت پلک جپھکنے پر بھی نہ کی ہو جیسا کہ پیغمبر کی روایت میں ہے ۔لہذا اس رات کو غنیمت سمجھو اور اپنی اطاعت اور عبادت۔ نماز اور خدا سے طلب حاجت میں مشغول رہو۔یہ بھی روایت ہے جو شخص اس رات میں سوال کرے گا خدا سے حاجت کا خدا اسے بہر حال عطا کرے گا
حوالہ:مفاتیح الجنان
مزید پڑھیں

مواد دستیاب نہیں ہے

خبریں

آج کا دن

آپکے بولتے ستارے

Apr 20, 2024 1:16 PM / دنیا

جانئے اپنے آج کے احوال اپنے ستاروں کی زبانی

مزید پڑھیں
ملکہ کونین

جناب سیدہ فاطمۃالزہرہؑ : کونین کی ملکہ

Jan 03, 2024 4:41 PM / دنیا

رسول اکرمؑ نے فاطمہ زہراؑ کو سیدۃ نساء العالمین کے طور پر متعارف کیا اور ان کی خوشی اور ناراضگی کو اللہ کی خوشنودی و ناراضگی قرار دیا ہے۔

مزید پڑھیں
عقیق : ایک معتبر نگینہ

عقیق: تاریخی اور ثقافتی اہمیت

Dec 30, 2023 12:40 PM / دنیا

جانئے عقیق کے متعلق پوشیدہ راز اور اس کے انسانی زندگی پر اثرات

مزید پڑھیں
چاند گرہن 2023

2023 کا آخری چاند گرہن

Oct 28, 2023 5:06 PM / دنیا

چاند گرہن ایک سحر انگیز آسمانی واقعہ ہے جہاں زمین سورج اور چاند کے درمیان سے گزرتی ہے اور چاند کی سطح پر اپنا سایہ ڈالتی ہے۔ یہ واقعہ صرف پورے چاند کے دوران ہوتا ہے جب زمین، چاند اور سورج بالکل سیدھ میں ہوتے ہیں۔

مزید پڑھیں

اسلامی تاریخ

May 09, 2022 4:48 PM / تاریخ

اسلام دنیا کا دوسرا بڑا مذہب ہے اور بہت سی شخصیات نے جہاد کی راہ میں اپنی جانیں، خاندان، سب کچھ قربان کیا ہے۔

مزید پڑھیں

یہ چار اقدامات شوال کے روزے رکھنے میں آپ کےمددگار رہیں گے

Apr 19, 2022 12:28 PM / شوال

جس نے رمضان کے روزے رکھے پھر اس کے بعد شوال کے چھ روزے رکھے تو گویا اس نے سال بھر کے روزے رکھے۔ (مسلمان)

مزید پڑھیں

ہم سے رابطہ کریں

 

سب سے زیادہ مقبول

مسلم ایپ !

اسلامی عقائد پر مبنی مقبول ترین اور مستند امامیہ جنتری آفیشیل ایپ